Home / ریاستی خبریں / اندھرا ؍تلنگانہ / نائب صدر جمہوریہ وینکیا نائیڈو کاعدلیہ میں علاقائی زبانوں کے استعمال پر زور

نائب صدر جمہوریہ وینکیا نائیڈو کاعدلیہ میں علاقائی زبانوں کے استعمال پر زور

حیدرآباد: (ہرپل نیوز؍ایجنسی) یکم اگست:۔نائب صدر جمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو نے عدلیہ سے مادری زبان بولنے والوں کے لیے قابل رسائی ماحول پیدا کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ چیف جسٹس آف انڈیا کے حالیہ اقدام کا حوالہ دیتے ہوئے ایک خاتون کو عدالت میں تیلگو میں بات کرنے کی اجازت دینے کے بارے میںنائب صدر جمہوریہ نے کہا کہ اس واقعے نے عدلیہ کی ضرورت پر زور دیا تاکہ لوگ اپنی مادری زبان میں اپنے مسائل کا اظہار کر سکیں۔ فیصلے علاقائی زبانوں میں بھی دئیے جا سکتے ہیں۔ہفتہ کو تیلگو کوٹامی کے زیر اہتمام مادری زبانوں کے تحفظ سے متعلق ایک ورچوئل کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نائیڈو نے خبردار کیا کہ مادری زبان کا نقصان بالآخر اپنی شناخت اور خود اعتمادی کے نقصان کا باعث بنتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے ورثے کے مختلف پہلوؤں – موسیقی، رقص، ڈرامہ، رسم و رواج، تہواروں، روایتی علم کو محفوظ رکھنا صرف اپنی مادری زبان کو محفوظ رکھ کر ہی ممکن ہوگا۔نائیڈو نے ہندوستانی زبانوں کے تحفظ پر زور دیا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ زبانوں کا تحفظ اور ان کے تسلسل کو یقینی بنانا صرف عوامی تحریک سے ہی ممکن ہے، انہوں نے کہا کہ ہماری زبان کے ورثے کو ہماری آنے والی نسلوں تک پہنچانے کی کوششوں میں لوگوں کو ایک آواز میں اکٹھا ہونا چاہیے۔ہندوستانی زبانوں کے تحفظ کے لیے درکار مختلف لوگوں کی قیادت کے اقدامات کو اجاگر کرتے ہوئے نائب صدر جمہوریہ نے ایک زبان کو بہتر بنانے میں ترجمے کے اہم کردار پر روشنی ڈالی۔انہوں نے ہندوستانی زبانوں میں تراجم کے معیار اور مقدار کو بہتر بنانے کے لیے کوششیں بڑھانے پر زور دیا۔ انہوں نے قدیم ادب کو نوجوانوں کے لیے سادہ بولی جانے والی زبانوں میں زیادہ قابل رسائی بنانے کی تجویز بھی پیش کی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/PWy7o

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.