Home / اہم ترین / نیپال میں اچانک آئے سیلاب سے 380 سے زائد گھر زیرآب

نیپال میں اچانک آئے سیلاب سے 380 سے زائد گھر زیرآب

کھٹمنڈو: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)7؍ستمبر: نیپال کے دارالحکومت کھٹمنڈو میں شدید بارش کی وجہ سے آنے والے سیلاب میں 380 سے زائد گھر زیرآب ہوگئے اور کئی رہائشی علاقوں کو نقصان پہنچا۔ پولیس نے پیر کو یہ معلومات دی۔ اتوار کی رات کھٹمنڈو میں شدید بارشوں کے نتیجے میں 100 سے زائد مقامات زیر آب آگئے۔ میٹروپولیٹن پولیس آفس کے ترجمان سشیل سنگھ راٹھور نے بتایا کہ نیپال پولیس، آرمڈ پولیس فورس اور نیپال آرمی کی ٹیموں نے کل رات 138 سے زائد افراد کو بچایا۔

راٹھور نے کہا کہ منوہرہ ندی کے کنارے ملپانی بستیوں، کداگری، ٹیکو اور بلخو علاقوں میں راحت اور بچاؤ کی کارروائیاں کی گئیں۔کھٹمنڈو میں دریا کے کنارے واقع بیشتر انسانی بستیاں سیلاب کی وجہ سے زیر آب آگئی ہیں۔ حکام کے مطابق کھٹمنڈو میں چار گھنٹے کے اندر 105 ملی میٹر بارش ہوئی۔ میٹروپولیٹن پولیس کے مطابق سیلاب کی وجہ سے کل 382 مکانات زیر آب آگئے۔سیلاب کی وجہ سے ٹانکیشور، دلو، ٹیکو، تچل، بلخو، نیا بسپارک، بھیمسنستھان، مچا پوکھاری، چابہیل، زورپتی اور کلوپول سمیت کئی علاقے زیر آب آگئے۔دریں اثنا اتوار کے روز ضلع اوکھلدھونگا کے بیٹینی گاؤں میں آسمانی بجلی گرنے سے سات افراد زخمی ہوئے۔ آسمانی بجلی گرنے سے درجنوں مکانات کو بھی نقصان پہنچا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/CGgDm

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.