Home / اہم ترین / پاکستان کو تین سال کی مؤخر ادائیگی پر تیل مہیا کرے گا سعودی عرب

پاکستان کو تین سال کی مؤخر ادائیگی پر تیل مہیا کرے گا سعودی عرب

اسلام آباد(ایجنسی)24مئی : سعودی عرب جولائی سے پاکستان کو تین سال کی مؤخر ادائی پر تیل مہیا کرے گا۔سعودی عرب نے گذشتہ سال اکتوبر میں پاکستان کو مالی بحران سے نکالنے کے لیے ادھار پر تیل دینے کا وعدہ کیا تھا اور اس پر اب تمام شرائط وضوابط طے ہونے کے بعد جولائی سے عمل درآمد کیا جائے گا۔
وزیراعظم پاکستان کے مشیر برائے خزانہ اور اقتصادی امور ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سعودی عرب سے تیل کی آمد سے پاکستان کو اپنے ادائی کے توازن کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔مشیر خزانہ نے ٹویٹر پر سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا پاکستان کے لیے مؤخر ادائی پر پیٹرولیم مصنوعات مہیا کرنے کے اقدام پر شکریہ ادا کیا ہے۔اس کے تحت سعودی عرب پاکستان کو ہر ماہ ساڑھے 27 کروڑ ڈالرز مالیت کا تیل مہیا کرے گا۔اس طرح ایک سال میں تین ارب 30 کروڑ ڈالرز مالیت کا تیل پاکستان کو موخر ادائی کی بنیاد پر مہیا کیا جائے گا۔

سعودی عرب پاکستان کو تیل مہیا کرنے والا ایک بڑا ملک ہے۔ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے فروری میں پاکستان کے دورے کے موقع پر دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون اور سرمایہ کاری کے فروغ سے متعلق مجموعی طور پر بیس ارب ڈالرز مالیت کے سمجھوتے طے پائے تھے اور سعودی عرب نے پاکستان کو نقد امداد دینے کے علاوہ ادھار پر تیل دینے سے بھی اتفاق کیا تھا۔وزیراعظم عمران خان کی حکومت نے اسی ماہ کے اوائل میں ملک کو درپیش مالی بحران سے نکلنے کے لیے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے چھے ارب ڈالرز مالیت کے ’ بیل آؤٹ‘ پیکج کا سمجھوتا طے کیا ہے۔ اس کے اعلان کے بعد سے پاکستانی کرنسی روپے کی قدر میں ڈالر کے مقابلے میں نمایاں کمی واقع ہوئی اور ایک ڈالرکی قیمت ڈیڑھ سو روپے سے بھی بڑھ گئی ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/wNSnx

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.