Home / اہم ترین / کانگریس صدارتی انتخاب: تنازع کو حل کرنے بھاگ دوڑ جاری

کانگریس صدارتی انتخاب: تنازع کو حل کرنے بھاگ دوڑ جاری

نئی دہلی:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)29؍ستمبر: راجستھان کانگریس میں جاری تنازعہ کے درمیان کانگریس تنظیم کے جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال نے کہا ہے کہ راجستھان کا معاملہ 1-2 دنوں میں حل ہو جائے گا۔ وینوگوپال، جو کیرالہ سے دہلی لوٹے ہیں، جمعرات کی صبح سونیا گاندھی کے پاس پہنچ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تنازع جلد حل ہو جائے گا۔ یہاں اشوک گہلوت بھی اب سے کچھ دیر میں 10 جن پتھ کے لیے روانہ ہوں گے۔

ذرائع کے مطابق راجستھان تنازعہ اور وزیر اعلی اشوک گہلوت کے سیاسی کردار پر سونیا گاندھی آج بڑا فیصلہ دے سکتی ہیں۔ اس کے پیچھے کانگریس صدر کے انتخاب کے لیے نامزدگی ہے۔ سونیا گہلوت ملاقات کے دوران کانگریس ڈسپلنری کمیٹی کے صدر اے کے انٹونی بھی موجود رہیں گے۔

سونیا ناراض، گہلوت تنازعہ حل کرنے پہنچ گئے دہلی

راجستھان میں اشوک گہلوت کے حامی ایم ایل اے کے باغی رویہ کے بعد سونیا گاندھی پوری حالات پر ناراض ہیں۔ آبزرور کی رپورٹ میں لیجسلیچر پارٹی کے اجلاس کے بائیکاٹ اور گہلوت کی حمایت کرنے والے وزراء کے بیانات کو ہائی کمان کے احکامات کی خلاف ورزی اور سنگین بے ضابطگی قرار دیتے ہوئے نوٹس جاری کیا گیا ہے۔

نوٹس جاری ہونے کے بعد گہلوت بھی پورے معاملے پر اپنا رخ پیش کریں گے۔ گہلوت نے کھلے عام کیمپ انچارج اجے ماکن پر جانبداری اور سچن پائلٹ کی حمایت کا الزام لگایا ہے۔ گہلوت راجستھان میں وزیراعلیٰ رہیں گے یا انہیں صدر نامزد کیا جائے گا، دونوں کا فیصلہ ہوگا۔

اگر سونیا گاندھی کو صدر کا امیدوار بنایا جاتا ہے تو وہ وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیں گی۔

راجستھان میں چار دن کے تنازعہ کے بعد اشوک گہلوت کو لے کر اعلیٰ کمان کے لیڈروں کے درمیان جو تاثر تھا وہ کافی بدل گیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ اگر اشوک گہلوت کو صدر کا انتخاب لڑنے کے لیے بنایا جاتا ہے تو سونیا گاندھی ان سے استعفیٰ دینے کو کہیں گی۔

سونیا گاندھی کے ساتھ گہلوت کی آخری ملاقات کے دوران صدر کے عہدے کو لے کر بحث ہوئی تھی۔ اس وقت گہلوت نے کہا تھا کہ صدر کے عہدے کے انتخاب پر راہل گاندھی کو آخری بار راضی کرنے کے بعد وہ دوبارہ فیصلہ لیں گے۔

کانگریس صدر کے عہدے کے لیے گاندھی خاندان کا امیدوار کون ہوگا اس پر بھی تصویر واضح ہونے کی امید ہے۔ آج مدھوسودن مستری، جو ریٹرننگ آفیسر کی ذمہ داری نبھا رہے ہیں، احمد آباد کے دورے پر ہیں، اس لیے وہاں کوئی نامزدگی نہیں ہوگی۔

کل 30 ستمبر کو کانگریس صدر کی نامزدگی کی آخری تاریخ ہے، اس لیے آج سب کچھ واضح ہونے کا امکان ہے۔ ششی تھرور نے کل صبح 11 بجے نامزدگی داخل کرنے کا اعلان کیا ہے۔ دگ وجے سنگھ نے بھی صدارتی انتخاب لڑنے کا اشارہ دیا ہے۔ گاندھی خاندان کے امیدوار پر آج تصویر واضح ہوگی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/2eJfE

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.