Home / اہم ترین / کانگریس کوگجرات کا حصہ بننے کے لیے ذات پات کی سیاست ترک ہوگی:مودی
Bhavnagar: Prime Minister Narendra Modi during a public meeting ahead of Gujarat Assembly election in Bhavnagar, Wednesday, Nov. 23, 2022. (PTI Photo)(PTI11_23_2022_000258A)

کانگریس کوگجرات کا حصہ بننے کے لیے ذات پات کی سیاست ترک ہوگی:مودی

بھاو نگر /گجرات::(ہرپل نیوز؍ایجنسی)28؍نومبر: لوگوں نے کانگریس کو اس کی ذات پات کی سیاست کی وجہ سے اقتدار سے باہر کر دیا ہے۔اگر وہ ریاست کا حصہ بننا چاہتی ہیں تو انہیں اس ذات پات کی سیاست چھوڑ کر اپنا انداز بدلنا ہوگا۔

ان خیالات کا اظہارپیر کو ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نےکیا۔

آپ کو بتادیں کہ مودی بھاو نگر ضلع کے پالی تانہ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کانگریس کے دور حکومت میں لوگ خود کو غیر محفوظ محسوس کر رہے تھے، بم دھماکے بہت عام تھے۔ ہر دوسرے دن دھماکہ ہوتا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ جب سے بی جے پی اقتدار میں آئی ہے، ان دکانوں کے شٹر اتار دیے گئے ہیں۔ اب لوگ بی جے پی راج میں محفوظ محسوس کر رہے ہیں، یہ بی جے پی کا تحفہ ہے۔

لوگوں سے ہر پولنگ اسٹیشن پر ووٹنگ میں حصہ لینے کی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آپ کو یہ یقینی بنانا ہوگا کہ ریاست میں کمل کھلے، آپ کو بھاری اکثریت کے لیے ہر سیٹ پر سخت محنت کرنی ہوگی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ کبھی لوگ روزگار کی تلاش میں گجرات سے ہجرت کر رہے تھے، اب تیزی سے صنعتی ہونے کی وجہ سے پورے ملک سے لوگ روزگار کی تلاش میں گجرات آ رہے ہیں۔

کانگریس پر حملہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ 2014 تک دہلی میں کانگریس کی حکومت تھی، صرف 60 گاؤں میں انٹرنیٹ کنیکٹیویٹی تھی، جب سے بی جے پی نے مرکز میں حکومت بنائی ہے، صرف آٹھ سالوں میں تین لاکھ گاؤں کو کنیکٹیوٹی مل گئی ہے۔

کسانوں کے فائدے کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے یاد دلایا کہ مرکزی حکومت یوریا کے فی بوری پر 1600 سے 1700 روپے سبسڈی دے رہی ہے، جب کہ کسان صرف 200 سے 300 روپے فی بوری ادا کر رہا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/AbKZ9

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.