Home / اہم ترین / کرناٹک میں ایک 16 سالہ طالبہ سے اجتماعی عصمت دری کے معاملے میں 4 افراد گرفتار

کرناٹک میں ایک 16 سالہ طالبہ سے اجتماعی عصمت دری کے معاملے میں 4 افراد گرفتار

بنگلورو: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)11؍اکتوبر: کرناٹک پولیس نے ایک 16 سالہ طالبہ کے اغوا اور اجتماعی عصمت دری کے سلسلے میں 4 افراد کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس ذرائع نے اتوار کو یہ معلومات دی۔ سپرنٹنڈنٹ آف پولیس رشیکیش بھگوان نے بتایا کہ ایک ملزم لڑکی کو فیس بک کے ذریعے جانتا تھا۔ اس نے دیگر ملزمان کے ساتھ مل کر جو اس کے دوست ہیں، لڑکی کا گینگ ریپ کیا۔

گرفتار ہونے والوں میں کے ایس شرت شیٹی، ماروتی منجوناتھ، لاج ستیش اور ہدایت اللہ کاپو کے رہائشی شامل ہیں۔ تمام افراد کو ہفتے کے روز گرفتار کیا گیا۔ ملزم شرت شیٹی جو کہ متاثرہ کو فیس بک کے ذریعے جانتا تھا، اس سے فون پر کثرت سے بات کرتا تھا۔ اس نے اسے اپنے رشتہ دار ماروتی منجوناتھ سے بھی متعارف کرایا ہے۔

منجوناتھ نے متاثرہ کو واٹس ایپ پر فحش پیغامات بھیجے اور ویڈیو کال بھی کی۔ یہ بات تحقیقات میں سامنے آئی۔ملزم شرت شیٹی نے لڑکی کو قصبے میں آنے کو کہا اور اسے ایک لاج میں لے جا کر عصمت دری کا نشانہ بنایا۔ پولیس نے بتایا کہ اس کے دوست ہدایت اللہ نے بھی اس کے ساتھ عصمت دری کی۔ ایک اور ملزم ستیش نے لاج کا انتظام کیا اور تینوں نے مل کر لڑکی کے ساتھ عصمت دری کی۔

یہ واقعہ اس وقت سامنے آیا جب طالبہ پولیس میں شکایت درج کرانے کے لیے آئی۔متاثرہ نے بتایا کہ جمعہ کی صبح تقریبا8.15 بجے جب وہ بنٹوال قصبے کے بس اسٹاپ کے قریب اسکول جا رہی تھی، ملزم ایک کار میں آیا۔ لڑکی نے شکایت میں بتایا کہ بات کرتے ہوئے ملزم نے اسے چاکلیٹ دی اور اس نے چاکلیٹ اپنے بیگ میں رکھتے وقت وہ بیہوش ہو گئی۔

لڑکی نے ابتدائی تفتیش میں پولیس کو بتایاکہ جب اسے ہوش آیا تو وہ بستر پر تھی اور ملزم نے اس کے ساتھ عصمت دری کی۔ وہ دوبارہ ہوش ہوگئی اور جب اسے ہوش آیا تو لڑکی نے خود کو گاڑی میں پایا۔ ملزم نے اسے بنٹوال قصبے کے قریب گرا دیا اور متاثرہ نے اپنی والدہ کو بلایا اور گھر پہنچی ۔ پولیس نے ملزم کے خلاف پاکسو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/mBIY0

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.