Home / اہم ترین / کیرالہ ہائی کورٹ کا حکم:ہڑتال کا نقصان پی ایف آئی5 کروڑ روپے ادا کرے

کیرالہ ہائی کورٹ کا حکم:ہڑتال کا نقصان پی ایف آئی5 کروڑ روپے ادا کرے

کوزی کوڈ:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)29؍ستمبر: پی ایف آئی لیڈروں کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے، کیرالہ ہائی کورٹ نے جمعرات (29 ستمبر، 2022) کو ہدایت دی کہ وہ ریاست میں ہڑتال سے ہونے والے نقصان کے معاوضے کے طور پر 5 کروڑ روپے ادا کریں۔ پی ایف آئی لیڈروں کو یہ رقم 2 ہفتوں کے اندر جمع کرنی ہوگی۔

عدالت نے پی ایف آئی کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح عام شہریوں کی زندگیوں کو خطرے میں نہیں ڈالا جا سکتا۔ پاپولر فرنٹ آف انڈیا نے 23 ستمبر کو ریاست میں ہڑتال کی کال دی تھی تاکہ اس کے لیڈروں کو گرفتار کرنے اور چھاپے مارنے میں کی کاروائی کے خلاف احتجاج کیا جا سکے۔

جسٹس اے کے جے شنکرن نمبیار اور جسٹس محمد نیاس سی پی کی بنچ نے ہڑتال کی سخت مذمت کی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں شہریوں کی زندگیوں کو اس طرح خطرے میں نہیں ڈالا جا سکتا۔ بنچ نے کہا کہ یہ واضح ہے کہ اگر کوئی ایسا کرتا ہے تو اسے اس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔

عدالت نے کہا کہ آپ احتجاج کر سکتے ہیں اور آئین بھی اس کی اجازت دیتا ہے لیکن آپ اچانک ہڑتال نہیں کر سکتے۔ عدالت نے سال 2019 میں ایک حکم میں کہا تھا کہ اگر کوئی سات دن کے عوامی نوٹس کے عمل کے بغیر ہڑتال کی کال دیتا ہے تو اسے غیر آئینی سمجھا جائے گا۔

عدالت نے یہ بھی کہا تھا کہ اس طرح کی ہڑتال کی کال کرنے والے شخص یا سیاسی پارٹی کو منفی نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔ پی ایف آئی ہڑتال کی مذمت کرتے ہوئے عدالت نے اس کے خلاف از خود کاروائی شروع کی۔ کیرالہ اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن نے بھی پاپولر فرنٹ آف انڈیا کو ہرجانے کی ادائیگی کے لیے ہدایت دینے کے لیے عدالت سے رجوع کیا تھا۔ عدالت نے کہا کہ عام شہریوں کے درمیان لفظ ہڑتال کا مطلب کچھ اور ہے۔

انہوں نے کہا کہ لوگ خوف میں جی رہے ہیں۔ عام آدمی کا اس سے کیا لینا دینا؟ عام آدمی کیوں اور کس کے لیے تکلیف میں ہے؟ ہڑتال کے دوران ریاست میں پیش آنے والے واقعات کی سخت مذمت کرتے ہوئے عدالت نے کہا کہ اس معاملے میں فوری کاروائی اس بات کو یقینی بنائے گی کہ کوئی دوبارہ ایسا کرنے کی ہمت نہ کرے۔

بنچ نے یہ بھی کہا کہ وہ سیشن اور مجسٹریٹ عدالتوں کو یہ بھی ہدایت دے گا کہ جہاں بھی پی ایف آئی کارکنوں کی ضمانت کی درخواستیں دائر کی جائیں گی وہاں ضمانت کی حالت میں جائیداد کو ہونے والے نقصان کے معاوضے پر اصرار کریں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/zkDt1

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.