Home / اہم ترین / گیان واپی مسجد معاملے کی سماعت کرنے والے جج کا تبادلہ

گیان واپی مسجد معاملے کی سماعت کرنے والے جج کا تبادلہ

وارانسی:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)21؍جون:اترپردیش کے شہر وارانسی میں واقع گیان واپی مسجد معاملے کی سماعت کرنے والے جج روی کمار دیواکر کا تبادلہ کر دیا گیا ہے۔ سینئر ڈویژن سیول جج روی کمار دیواکر کو وارانسی سے بریلی بھیجا گیا ہے۔الٰہ آباد ہائی کورٹ کی سالانہ ٹرانسفر لسٹ میں روی کمار دیواکر کا نام بھی شامل ہے، جس کے تحت سینئر ڈویژن کے 121 سول ججوں کا تبادلہ کیا گیا ہے۔روی کمار دیواکر گیان واپی مسجد تنازع کی سماعت کر رہے تھے اور مسجد احاطے کے سروے کا حکم انہی نے دیا تھا۔سپریم کورٹ کے حکم پر سماعت اب ڈسٹرکٹ جج کو منتقل کر دی گئی ہے۔

سروے کے آخری دن مبینہ شیولنگ ملنے کے دعوے پر گیان واپی مسجد کے وضو خانہ کو سیل کرنے کے احکامات بھی دیے گئے تھے۔ تمام ٹرانسفر ہونے والے ججوں کو 4 جولائی کی سہ پہر تک اپنی ذمہ داریاں سنبھالنی ہوں گی۔الہ آباد ہائی کورٹ کے رجسٹرار جنرل آشیش گرگ نے ٹرانسفر لسٹ جاری کی ہے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے سیول جج (سینئر ڈویژن) روی کمار دیواکر کو دھمکی آمیز خط بھی ملا تھا۔ جج دیواکر نے اس سلسلے میں ایڈیشنل چیف سکریٹری (ہوم)، ڈائرکٹر جنرل آف پولیس اور پولس کمشنر وارانسی کو خط لکھ کر موصول ہونے والی دھمکی کی اطلاع دی تھی۔ حکام کو بھیجے گئے خط میں دیواکر نے تحریر کیا تھا کہ جو خط انہیں ملا ہے وہ ’اسلامی آغاز موومنٹ ‘کی جانب سے کاشف احمد صدیقی کے نام سے بھیجا گیا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/Ui6dv

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.