Home / اہم ترین / گیان واپی کیس : اے ایس آئی حلف نامہ داخل کرے۔ہائی کورٹ

گیان واپی کیس : اے ایس آئی حلف نامہ داخل کرے۔ہائی کورٹ

الہ آباد:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)29؍ستمبر: گیان واپی مسجد-کاشی وشوناتھ مندر تنازعہ میں، الہ آباد ہائی کورٹ نے بدھ کو آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا کے ڈائریکٹر جنرل سے وارانسی میں اس جگہ کے تعلق سے ذاتی حلف نامہ داخل کرنے کو کہا جس پر مسلمانوں اور ہندوؤں نے پوجا کے حق کا دعویٰ کیا ہے۔

سنگل جج جسٹس پرکاش پاڈیا نے مشاہدہ کیا کہ یہ معاملہ قومی اہمیت کا ہے اور یہ معاملہ 1991 سے زیر التوا ہے اور اس لیے ڈائریکٹر جنرل سے کہا کہ وہ اس حکم کی خط اور روح سے تعمیل کریں۔

حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ چونکہ یہ معاملہ قومی اہمیت کا ہے اور حقیقت یہ ہے کہ مقدمہ ٹرائل کورٹ کے سامنے 1991 سے زیر التوا ہے۔ اس لیے اس عدالت کو امید اور اعتماد ہے کہ جواب دہندہ نمبر 7/ ڈائریکٹر جنرل، آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا 12 ستمبر 2022 کو اس معاملے پرحکم کے مطابق 18 اکتوبر 2022 کی اگلی تاریخ کو یا اس سے پہلے تعمیل کرے گی۔

عدالت نے ڈائریکٹر جنرل کو اضافی وقت دیا جب انہوں نے کہا کہ وہ بیماری میں مبتلا ہیں اور انہیں آرام کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

سنگل جج نے 9 ستمبر 2021 کے عبوری حکم میں بھی توسیع کی، جس نے وارانسی عدالت کے سامنے کارروائی پر روک لگا دی اور اے ایس آئی کے ذریعہ گیان واپی مسجد کمپلیکس کے سروے کی 31 اکتوبر 2022 تک اجازت دی۔

پچھلے مہینے اس کیس میں منظور کیے گئے اسی طرح کے حکم میں، جسٹس پاڈیا نے کہا تھا کہ اے ایس آئی ڈی جی کی طرف سے دائر کیا گیا پہلے حلف نامہ "بہت مختصر" تھا اور اس طرح اے ایس آئی ڈی جی کا ذاتی حلف نامہ طلب کیا گیا۔

عرضی گزار – انجمن انتظاریہ مسجد – نے وارانسی ڈسٹرکٹ کورٹ میں 1991 میں دائر اصل مقدمے کی پائیداری کو چیلنج کرتے ہوئے ہائی کورٹ کا رخ کیا ہے۔عدالت اب اس معاملے کی سماعت 18 اکتوبر 2022 کو کرے گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/HUs3C

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.