Home / اہم ترین / ہندوستان انسانی حقوق کے تئیں ہمیشہ پابند عہد رہا: مودی

ہندوستان انسانی حقوق کے تئیں ہمیشہ پابند عہد رہا: مودی

نئی دہلی: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)14؍اکتوبر: وزیراعظم نریندر مودی نے آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ قومی حقوق انسانی کمیشن ( این ایچ آر سی ) کے 28 ویں یوم تاسیس کے پروگرام میں شرکت کی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ہندوستان کی جدوجہدآزادی اور اس کی تاریخ انسانی حقوق اور ہندوستان کے لیے انسانی حقوق کی اقدار کا ایک عظیم وسیلہ ہے-

انہوں نے کہا کہ ایک ملک کے طورپر ، ایک سماج کے طورپر ہم نے ناانصافی – ظلم وزیادتی کے خلاف مزاحمت کی اور ہم نے صدیوں تک اپنے حقوق کے لیے لڑائی لڑی ۔ ایسے وقت میں جب کہ پوری دنیا پہلی جنگ عظیم کے تشدد سے متاثر تھی ، ہندوستان نے دنیا کو حقوق اور عد م تشدد کا راستہ دکھایا ۔ وزیراعظم نے گاندھی جی کو یاد کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ نہ صرف ہندوستان بلکہ پوری دنیا باپوکو انسانی حقوق اور انسانی اقدار کی علامت کے طورپر دیکھتی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ایسے کئی مواقع پر جبکہ دنیا وہم یا تذبذب کا شکار تھی، ہندوستان انسانی حقوق کے تئیں پوری طرح پختہ اور حساس رہا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ انسانی حقوق کا تصور غریبوں کے وقارسے قریبی تعلق رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب غریب سے غریب تر شخص کو حکومت کی اسکیموں میں برابر کی حصہ داری نہیں ملتی ، اس وقت حقوق کا سوال اٹھتا ہے۔ وزیر اعظم نے غریبوں کے وقار کو یقینی بنانے کے لیے حکومت کی کوششوں کا ذکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ جب ایک شخص تو کھلے میں رفع حاجت سے آزادی کے حصو ل کے بیت الخلاء حاصل ہوتا ہے تو اسے وقار حاصل ہوتا ہے۔ اسی طرح جب ایک غریب آدمی ، جو بینک میں داخل ہونے سے بھی ہچکتاتھا ، جن دھن کھاتہ کھلنے کے بعد اس کا وقار یقینی ہوا ہے۔اسی طرح روپے کارڈ ، اجولا گیس کنکشن اور خواتین کے لیے پکے مکانوں کے حقوق اس سمت میں اہم اقدام ہیں۔

پچھلے چند برسوں کے دوران اس طرح کے اقدامات کا ذکرکرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ملک نے مختلف طبقوں میں مختلف سطحوں پر ہونے والی ناانصافی کو ختم کرنے کی کوشش کی ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ کئی دہائیوں سے مسلم خواتین تین طلاق کے خلاف قانون کا مطالبہ کررہی تھیں، ہم نے تین طلاق کے خلاف قانون بناکر مسلم خواتین کو نئے حقوق دئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے شعبے خواتین کے لیے کھولے گئے ہیں اور اس بات کو یقینی بنایا گیا ہے کہ وہ 24 گھنٹے سکیورٹی کے ساتھ کام کرسکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے کام کرنے والی خواتین کے لیے تنخواہ کےساتھ 26 ہفتے کی زچگی کی چھٹیوں کو یقینی بنایا ہے ، یہ ایک ایسا کارنامہ ہے، جسے کئی ترقی یافتہ ممالک بھی انجام نہیں دے سکے ہیں۔اسی طرح وزیر اعظم نے مخنث افراد ، بچوں ، خانہ بدوشوں اور نیم خانہ بدوش طبقوں کے لیے حکومت کے ذریعہ کئے گئے اقدامات کا ذکر کیا۔

حالیہ پیرالمپکس میں معذور کھلاڑیوں کی باعث تحریک کارکردگی کو یاد کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ حالیہ برسوں میں دویانگ جن ( معذوری سے متاثرہ افراد) کے لیے قانون بنائے گئے ہیں۔ انہیں نئی سہولیات فراہم کی گئی ہیں۔ عمارتیں ایسی تعمیر کی جارہی ہیں ، جنہیں دویانگ جن آسانی سے استعمال کرسکتے ہیں اور دویانگوں کے لیے زبان کو معیاری بنایا جارہا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/PCvqR

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.