Home / اہم ترین / یو پی میں اکھلیش نے قبرستان، یوگی نے شمشان بنوائے، ہم اسکول تعمیرکروائیں گے ،کجریوال کا وعدہ ، انتخابی مہم کا آغاز

یو پی میں اکھلیش نے قبرستان، یوگی نے شمشان بنوائے، ہم اسکول تعمیرکروائیں گے ،کجریوال کا وعدہ ، انتخابی مہم کا آغاز

لکھنؤ :(ہرپل نیوز؍ایجنسی)3جنوری: چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے اتوار کے روز لکھنؤ میں منعقدہ جلسہ عام سے یوپی اسمبلی انتخابات کے لئے عام آدمی پارٹی کی مہم کا آغاز کردیا۔ عام آدمی پارٹی کے کنوینر اروند کجریوال نے اپنے خطاب میں بی جے پی پر زبردست تنقید کی اور متعدد اعلانات کئے۔ اپنے خطاب کے دوران کجریوال نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کے بڑے لیڈر نے یوپی میں آ کر کہا تھا کہ اگر قبرستان بنایا جاتا ہے تو شمشان گھاٹ بھی بننا چاہئے۔ پرانی حکومت نے صرف قبرستان بنوائے اور یوگی حکومت نے صرف شمشان گھاٹ بنوائے، ہمیں موقع دیجئے ہم آپ کے بچوں کے لئے اسکول اور سب کے لئے ہاسپٹلس تعمیر کروائیں گے۔ لکھنؤ میں سمرتی اْپون میں منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کجریوال نے یوگی آدتیہ ناتھ پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ یوگی حکومت نے گزشتہ 5 برسوں میں صرف شمشان بنوائے ہی نہیں بلکہ انہوں نے بڑی تعداد میں لوگوں کو وہاں پہنچانے کا بھی کام کیا۔ جس طرح کورونا کے دور میں پوری دنیا میں یوپی کے کورونا انتظامات کی تھو تھو ہوئی اس پر پردہ ڈالنے کے لئے یوگی حکومت کو امریکہ کی بڑی میگزین میں 10۔10 صفحات پر مشتمل اشتہار دینے پڑے۔ ان اشتہارات پر ریاستی حکومت نے کروڑو روپے خرچ کر ڈالے۔اپنے خطاب کے دوران کجریوال نے مزید کہا کہ تعلیم کے حوالہ سے ہم بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کے خواب کو 70 سال کے بعد بھی پورا نہیں کر پائے، لیکن خواہ میری پوری زندگی ہی کیوں نہ گزر جائے میں یہ کام کر کے رہوں گا۔ انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے لوگوں کو جان بوجھ کر ان پڑھ رکھا۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم نے دہلی کے اسکوں کو بہتر بنا دیا ہے تو کیا ہم یہی کام یوپی میں کیوں نہیں کر سکتے؟سماجوادی پارٹی کے 300 یونٹ بجلی مفت کے اعلان پر طنز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کل کچھ جماعتیں بھی فری بجلی فراہم کرنے کا اعلان کر رہی ہیں لیکن اس کا فارمولہ صرف اور صرف کجریوال کے پاس ہے۔ خیال رہے کہ اکھلیش یادو نے حال ہی میں اعلان کیا تھا کہ وہ 300 یونٹ تک بجلی مفت دیں گے، نیز کسانوں کو بھی سینچائی کیلئے بجلی مفت فراہم کی جائے گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/EZ4Om

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.