Home / اہم ترین / 1 نومبر سے ایل پی جی سلینڈر کی ہوم ڈلیوری کا بدلنے والا ہے پورا نظام: جانیں کیسے

1 نومبر سے ایل پی جی سلینڈر کی ہوم ڈلیوری کا بدلنے والا ہے پورا نظام: جانیں کیسے

نئی دہلی (ہرپل نیوز، ایجنسی)16اکتوبر: اب آپ کے ایل پی جی سلینڈر کی ہوم ڈلیوری کا عمل اب پہلے کی طرح نہیں ہوگا کیونکہ اگلے مہینے سے ڈلیوری سسٹم میں تبدیلی ہونے والی ہے۔ گھریلو سلینڈر کی چوری کو روکنے اور صحیح کسٹمر کی شناخت کے لئے تیل کمپنیاں یکم نومبر سے نیا ایل پی جی سلنڈر کا ڈلیوری سسٹم نافذ کرنے والی ہیں۔ یہ نیا نظام کیا ہے ہم آپ کو سب کچھ بتاتے ہیں۔اس نئے سسٹم کو ڈی اے سی (DAC) کا نام دیا جا رہا ہے۔ یعنی کہ ڈلیوری آتھانٹیکیشن کوڈ اب صرف بکنگ کرا لینے بھر سے سیلینڈر کی ڈلیوری نہیں ہوگی بلکہ آپ کے رجسٹرڈ موبائل نمبر پر ایک کوڈ بھیجا جائے گا اس کوڈ کو جب تک آپ ڈلیوری بوائے کو نہہں دکھائیں گے تب تک ڈلیوری پوری نہیں ہوگی۔

اگر موبائل نمبر نہیں کیا اپڈیٹ تو کرنا ہوگا یہ کام:حالانکہ اگر کوئی کسٹمر ایسا بھی ہے جس نے ڈسٹریبیوٹر کو موبائل نمبر اپڈیٹ نہیں کرایا ہے تو ڈلیوری بوائے کے پاس ایک ایپ ہوگا جس کے ذریعے آپ حقیقی وقت اور اپنا فون نبمر اپڈیت کروائیں گے اور اس کے بعد کوڈ جنریٹ کر سکیں گے۔ایسے میں ان کسٹمرس کی مشکلیں بڑھ جائیں گی جن کا پتہ غلط اور موبائل نمبر غلط ہے تو اس وجہ سے ان لوگوں کو سلینڈر کی ڈلیوری نہیں کی جاسکتی ہے۔ ڈلیوری کو روکا جاسکتا ہے۔تیل کمپنیاں اس سسٹم کو پہلے سو (100) اسمارٹ سٹی میں نافذ کرنے والی ہیں۔ اس کے بعد دھیرے دھیرے دوسری سٹی میں بھی یہ نظام نافذ کیا جاسکتا ہے۔ جے پور میں اس کا پئلٹ پروجیکٹ پہلے سے چل رہا ہے۔بتادیں کہ 95 فیصدی سے زیادہ اس پروجیکٹ کا سکسیز ریٹ تیل کمپنیوں کو ملا ہے۔ یہ سسٹم کمرشیل سلینڈر پر نافذ نہیں ہوگا صرف ڈومیسٹک کیلئے یہ قواعد نافذ کئے جائیں گے۔بشکریہ نیوز ایٹین

The short URL of the present article is: http://harpal.in/xLHof

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.