Home / اہم ترین / کانگریس کے سینئرلیڈرآسکرفرنانڈیز کا انتقال

کانگریس کے سینئرلیڈرآسکرفرنانڈیز کا انتقال

بنگلورو: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)14؍ستمبر: کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر آسکر فرنانڈیز کا آج طویل علالت کے بعد انتقال ہو گیا۔ 80 سالہ آسکر کا علاج گزشتہ کچھ ہفتوں سے کرناٹک کے منگلور میں واقع ایک اسپتال میں چل رہا تھا جہاں انھوں نے آج آخری سانس لی۔ رواں سال کے شروع میں یوگا کرتے ہوئے انھیں چوٹ لگ گئی تھی، اس کے بعد سے ان کی طبیعت لگاتار خراب رہنے لگ گئی تھی۔آسکر فرنانڈیز کے انتقال کی خبر منظر عام پر آنے کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی اور راہل گاندھی و پرینکا گاندھی سمیت کانگریس کے سرکردہ لیڈروں کا تعزیتی پیغام سامنے آیا ہے۔ وزیر اعظم نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ راجیہ سبھا رکن آسکر فرنانڈیز جی کے انتقال سے غمزدہ ہوں۔ اس دکھ کے وقت میں میری ہمدردیاں اور دعائیں ان کے اہل خانہ اور خیر خواہوں کے ساتھ ہیں۔ ان کی روح کو سکون ملے۔کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے آسکر فرنانڈیز کے انتقال کو ذاتی نقصان قرار دیا ہے۔ انھوں نے اپنے ایک ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ آسکر فرنانڈیز جی کے اہل خانہ اور دوستوں کے تئیں میری مخلصانہ ہمدردی۔ یہ میرے لیے ذاتی خسارہ ہے۔ وہ کانگریس پارٹی میں ہم میں سے کئی لوگوں کیلئے ایک رہنما اور آبزرور تھے۔ انھیں یاد کیا جائے گا اور ان کے تعاون کیلئے ہمیشہ محبت کے ساتھ یاد کیا جائے گا۔

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے سینئر لیڈر آسکر فرنانڈیز کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے انھیں کانگریس کا وفادار فوجی ٹھہرایا۔ پرینکا گاندھی نے سوشیل میڈیا پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ آسکر جی کے اہل خانہ کے تئیں دلی ہمدردی۔ آپ (آسکر فرنانڈیز)ہمارے دلوں اور دعاؤں میں ہمیشہ رہیں گے۔ انھوں نے مزید لکھا ہے کہ وہ آسکر جی کانگریس پارٹی کے سب سے بہترین، سب سے وفادار فوجیوں میں سے ایک تھے، ہم سبھی انھیں بہت یاد کریں گے۔واضح رہے کہ آسکر فرنانڈیز کا شمار کانگریس صدر سونیا گاندھی اور راہل گاندھی کے انتہائی قریبی لیڈروں میں ہوتا تھا۔ وہ یو پی اے حکومت میں سڑک-ٹرانسپورٹیشن کے وزیر رہ چکے تھے۔ اب بھی آسکر فرنانڈیز راجیہ سبھا رکن تھے۔ یو پی اے حکومت کے دونوں دور میں وزیر رہ چکے آسکر فرنانڈیز طویل مدت سے گاندھی فیملی کے ساتھ کام کر رہے تھے۔ راجیو گاندھی کے وہ پارلیمانی سکریٹری رہ چکے ہیں۔ سال 1988 میں کرناٹک کی اڈپی لوک سبھا سیٹ سے وہ رکن پارلیمنٹ منتخب ہوئے تھے، اس کے بعد 1996 تک وہاں سے لگاتار جیتتے رہے۔ سال 1998 میں کانگریس نے انھیں راجیہ سبھا بھیج دیا تھا، اور تب سے وہ بطور راجیہ سبھا رکن ہی پارلیمنٹ سے جڑے رہے۔ آسکر فرنانڈیز کی پیدائش 27 مارچ 1941 کو کرناٹک کے اڈپی میں ہی ہوئی تھی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/THGpb

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.